علی ظفر پر ہراسگی کا الزام لگانے والی لڑکی نے معذرت کر لی۔۔۔

0
85

گزشتہ ڈیڑھ برس سے علی ظفر اور میشا شفیع کیس خبروں کی زینت بنا ہوا ہے۔اداکارہ میشا شفیع نے گزشتہ برس علی ظفر پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا۔میشا شفیع کا کہنا تھا کہ علی ظفر نے جیمنگ کے دوران مجھے جنسی طور پر ہراساں کرنے کی کوشش کی اور اس وقت میں دو بچوں کی ماں تھی۔علی ظفر نے اس الزام کی سختی سے تردید کی لیکن ابھی تک یہ معاملہ عدالت میں زیرِ سماعت ہے۔اس کیس کی وجہ سے سوشل میڈیا پر جنگ کا ماحول ہے اور فلم انڈسٹری دو دھڑوں میں تقسیم ہے۔کچھ میشا شفیع کا ساتھ دیتے ہوئے علی ظفر کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں جب کہ علی ظفر کے حامیوں کے نزدیک میشا کا یہ اقدام شہرت حاصل کرنے کی ناکام کوشش ہے۔۔

گزشتہ برس میشا شفیع نے پاکستان میں می-ٹو موومنٹ کا آغاز کرتے ہوئے گلو کار علی ظفر پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔می-ٹو موومنٹ سوشل ورکرز کی ایک تحریک ہے جسکا مقصد خواتین کی جنسی ہراسگی کے خلاف آواز بلند کرنا ہے۔میشا شفیع کے الزام کے بعد کئی خواتین نے علی ظفر پر ہراسگی کے الزامات لگائے جن میں صوفیا نامی ایک خاتون بھی تھی۔صوفیا نے میشا شفیع کے ٹویٹ کے بعد ایک ٹویٹ کیا جس میں انہوں نے امریکہ میں فنڈ ریزنگ کی تقریب کے دوران علی ظفر پر ایک خاتون کو ہراساں کرنے کا الزام لگایا جس کے بعد صوفیا نے اپنا ٹوئیٹر اکاؤنٹ بند کر دیا۔علی ظفر نے خود نہ صرف اس الزام کی سختی سے تردید کی بلکہ اُن کے ساتھ امریکہ میں شوکت خانم فنڈ ریزنگ میں موجود خاتون ساتھی نے بھی ایسے کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کی تردید کی۔اس کے باوجود سوشل میڈیا پر علی ظفر شدید تنقید کی زد میں رھے۔۔۔

چند دن پہلے اُس صوفیا نامی خاتون نے دوبارہ ایک ٹویٹ کیا جس میں اس نے علی ظفر سے معافی مانگتے ہوئے کہا کہ اسے ایک لڑکی کی جانب سے گمراہ کیا گیا تھا۔چونکہ وہ خود بھی ہراسگی کا شکار رہی ہیں اس وجہ سے انکو اُس لڑکی کی بات کا یقین کرنا پڑا اور گزشتہ برس کا ٹویٹ اسی غلط فہمی کا نتیجہ تھا۔صوفیا نے مزید کہا کہ اُنکی وجہ سے علی ظفر کو بیجا تنقید کا سامنا کرنا پڑا جس کے لئے وہ انتہائی شرمندہ ہیں۔علی ظفر نے بڑے دل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس لڑکی کو معاف کر دیا اور کہا کہ تم بہت ہمت والی ہو، اللہ تمہیں صحتمند اور تندرست رکھے۔۔دوسری طرف میشا شفیع نے علی ظفر پر 200 کروڑ ہرجانے کا دعویٰ کیا ہوا ہے جس کی سماعت 7 اکتوبر تک ملتوی ہے۔۔۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here