عمران خان اور مہا تیر محمد میں گہرے تعلقات

0
170

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) سینئر صحافی ہارون الرشید کا کہنا ہے کہ عمران خان اور مہا تیر محمد میں گہرے تعلقات ہیں۔مہاتیر محمد کہتے ہیں کہ میں پاکستانی قوم کے لیے کام کرنا چاہتا ہوں۔مہا تیر محمد کو پاکستان کے لوگوں سے بہت محبت ہے کیونکہ مہاتیر محمد کے آباؤ اجداد برصغیر سے گئے ہیں۔

جب عمران خان اور مہاتیر محمد ایک دوسرے سے ملے تو ان میں اچھے تعلقات قائم ہو گئے،یوں سمجھیں کہ دونوں میں باپ بیٹے جیسا تعلق قائم ہو گیا۔مہاتیر محمد اور عمران خان کی عمروں میں قریبا 40 سال کا فرق ہے۔مجھ سمیت کئی اور دوستوں نے ماضی میں عمران خان کو ملائیشا کے وزیراعظم سے ملنے کے مشورے دئیے کیونکہ ملائیشیا ایک انتہائی غریب قوم کی تھی،جنہوں نے ترقی کی اور جدید تعلیمی ادارے قائم کیے۔آمدن بھی بڑھ گئی۔

مہا تیر محمد کا بہت تجربہ ہے،عمران خان ان سے ملاقات میں اس سے مستفید بھی ہو سکتے ہیں۔اس کے علاوہ کوالمپور سمٹ میں شرکت نہ کرنا بھی عمران خان کے ملائشیا کے دورے کی ایک وجہ ہے۔عمران خان کے نہ جانے کی کچھ وجوہات تھیں اور وہ وجوہات ترک صدر نے سب کو بتا دیں۔ہاورن الرشید نے مزید کہا کہ مہاتیر محمد ذاتی طور پر پاکستان سے بہت محبت کرت ہیں،ایک زمانے میں مہاتیر محمد نے سنجیدگی کے ساتھ اس منصوبہ پر غور کیا تھا کہ ہم پاکستان کی اتنی مدد کریں گے کہ ان کو کھانے کا تیل امپورٹ نہ کرنا پڑے۔تاہم کچھ نالائق لوگوں کی وجہ سے اس منصوبے پر عمل نہ ہو سکا۔عمران خان کے دورے میں ملائیشیا سے مدد مل سکتی ہے۔

واضح رہے کہ اس وقت وزیراعظم عمران خان ملائشیا کے دو روزہ دورے پر ہیں۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی، اصلاحات و خصوصی اقدامات اسد عمر اور وزیر اعظم کے مشیر تجارت عبدالرزاق دائود بھی وزیر اعظم کے ہمراہ ہیں۔

دونوں ممالک کے وزرائے اعظم دوبدو ملاقات میں دوطرفہ دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کریں گے علاوہ ازیں دونوں ممالک کے وزراعظم کی موجودگی میں وفود کی سطح پر اہم معاہدے اور مفاہمتی یاداشت پر دستخط ہوں گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here