بل گیٹس نے وزیرِ اعظم مودی کو ٹوائلٹس گفٹ کیے۔۔۔۔

بھارت آبادی کے لحاظ سے چین کے بعد دنیا کا دوسرا بڑا ملک ہے۔بھارت کی آبادی 1.3 ارب سے تجاوز کر چکی ہے۔اتنی زیادہ آبادی ہونے کی وجہ سے بھارت کی عوام کو کئی مشکلات کا سامنا ہے جن میں سرفہرست مسئلہ واش رومز یا بیت الخلا کا نہ ہونا ہے۔ بھارت کی عوام رفع حاجت پوری کرنے کے لیے کھلی جگہ پر جانے پر مجبور ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کو کافی مشکلات ہیں اور وہ مختلف موذی بیماریوں کا شکار ہو جاتے ہیں۔اس کے علاوہ اس طرح کی کھلی لیٹرینز ماحول کو آلودہ کرتی ہیں اور وہاں سے لوگوں کا گزر مشکل ہو جاتا ہے۔

2014 کی ایک رپورٹ کے مطابق بھارت میں تقریباً 500 ملین افراد ٹوائلٹس کی کمی کا شکار تھے۔بہت سی سماجی تنظیمیں اس وقت بھارت میں ٹوائلٹ فراہمی کی خدمات سر انجام دے رہی ہیں۔نریندر مودی نے اقتدار میں آتے ہی اس مسئلے کی طرف خصوصی توجہ دی اور “سونچ بھارت مہم”(کلین بھارت) کا آغاز کیا اور اب تک اس مہم کے تحت 100 ملین ٹوائلٹس بنائے جا چکے ہیں۔اس مہم سے پہلے بھی بھارتی حکومت ٹوائلٹس بنانے پر سبسڈی دے رہی تھی لیکن اس کے ساتھ مسئلہ یہ تھا سبسڈی قسطوں میں تھی اور لیٹرین کی کنسٹرکشن ایک سال لے جاتی تھی۔سونچ بھارت مہم کے ذریعے لٹرینز کے اس مسئلے کو کم کرنے میں کافی مدد ملی ہے لیکن ابھی بھی بہت سا کام کرنا باقی ہے۔۔۔

بل گیٹس فاؤنڈیشن دنیا میں نمایاں کام کرنے والوں کو ہر سال اعزازی ایوارڈ سے نوازتی ہے۔بل گیٹس فاؤنڈیشن نے 2019 کے ایوارڈ کا قرعہ مودی کے نام نکلا۔مودی کو سونچ بھارت کیمپین کے ذریعے بھارتی لوگوں کی مشکلات حل کرنے کی وجہ سے ایوارڈ سے نوازا گیا۔اس ایوارڈ پر مختلف حلقوں سے شدید ردِ عمل دیکھنے کو ملا۔1 لاکھ لوگوں نے مودی کو ایوارڈ ملنے کے خلاف پیٹیشن دائر کیں کیوں کہ مودی کی شخصیت متنازع شخصیت ہے اور مودی گجرات کے قتل عام میں ملوث ہے۔اس کے علاوہ امریکہ بھی مودی کے داخلے پر پابندی لگا جا چکا ہے۔ لیکن بل گیٹس فاؤنڈیشن کے ترجمان کا کہنا تھا کہ مودی کو ایوارڈ دینے کا مقصد دنیا کی توجہ صفائی کی طرف مبذول کرانا ہے۔اس ایوارڈ کے بعد بل گیٹس فاؤنڈشن بھارت میں ٹوائلٹ فراہمی مہم میں بھارتی حکومت کے ساتھ مل کر کام کرے گی جس سے لوگوں کو ٹوائلٹ جیسی بنیادی سہولت کی جلد فراہمی ممکن ہو سکے گی۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *