لیاقت قائم خانی سے نیب نے کتنی رقم وصول کی؟

0
67

لوٹ مار اور کرپشن کی ہوشربا داستانوں میں سے ایک داستاں پارکس اینڈ ہاٹی کلچر کے سابقہ ڈائریکٹر جنرل لیاقت علی قائم خانی کی ہے جنہوں نے نیب کے اندازے کے مطابق ایک ارب سے زیادہ کی کرپشن کی ہے. نیب ٹیم نے مستعدی سے لیاقت علی قائم خانی کے گھر سے قیمتی زیورات اور بھاری تعداد میں کرنسی نوٹ برآمد کر کے اپنی تحویل میں لے لیے.

لیاقت علی قائم خانی کراچی میٹرو پولیٹن کارپوریشن میں پارکس اور ہاٹی کلچر کے سابقہ ڈائریکٹر جنرل تھے جنہوں نے 20 سال کے عرصے میں 71 کاغذی پارکس بنوائے جن کا کراچی میں کوئی وجود نہیں. ان کاغذی پارکس کی صفائی ستھرائی اور مرمت کے لیے جعلی کمپنیاں بنائیں اور سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچایا.

نیب نے لیاقت قائم خانی کے گھر چھاپہ مار کے متعدد اشیاء کو اپنی تحویل میں لے لیا. نیب حکام کے مطابق قائم خانی کا گھر 10 ارب روپے سے زیادہ مالت کا ہے اوران کے گھر سے برآمد ہونے والے سونے کی مالیت ایک اندازے کے مطابق 150 ملین روپے کے قریب ہے. کراچی میٹروپولیٹن کے سابقہ ڈائریکٹر جنرل کے گھر سے کروڑوں روپے مالیت کے طلائی زیورات اور نقدی کا ملنا یقیناً باعثِ حیرت ہے جس کی تفتیش جاری ہے.

نیب حکام کے مطابق لیاقت علی قائم خانی اس معاملے میں اکیلے ملوث نہیں بلکہ اس کہانی کے تانے بانے کہیں اور جگہ ملتے نظر آتے ہیں. یقیناً جب یہ کہانی آگے بڑھے گی تو کئ رازوں سے پردہ اٹھے گا اور اس کہانی کے کئ اہم کردار منظر عام پر آئیں گے. نیب مزید تین ریفرنس دائر کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جس میں کئ پردہ نشینوں کے کارنامے بھی عیاں ہو گے.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here