کرتارپور راہداری پر پاکستان نے بھارت کے سابق وزیراعظم کو مدعو کیا

0
80

پاکستان نے نومبر میں گرونانک صاحب کی 550 ویں یوم پیدائش کے موقع پر کرتارپور راہداری کے افتتاح کا فیصلہ کیا ہے۔اس تقریب میں پاکستان نے ہندوستان کے سابق وزیراعظم من موہن سنگھ کو مدعو کرنے کا فیصلہ کیا ہے
شاہ محمود قریشی نے اپنے وڈیو پیغام میں کہا کہ پاکستان کے تمام سٹیک ہولڈرسے مشاورت کے بعد من موہن سنگھ کو مدعو کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

مزید انہوں نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا راہداری ایک تاریخی موقع ہے اور پاکستان چاہتا ہے کہ ہندوستانی سابق وزیراعظم اس تاریخی لمحات کا حصہ بنیں اور پاکستان نے باقاعدہ دعوت نامہ ان کو بھجوا دیاہے۔

کرتارپور راہداری پاکستان کے نارووال شہر کو ہندوستان کی گورداس پور ضلع سے ملاتا ہے۔ یہ سکھوں کیلئے مقدس مقام ہیں جہاں گورونانک نے اپنی زندگی کے آخری 18 سال گزارے۔

پاکستانی پروجیکٹ ڈائریکٹر عاطف مجید نے کہا کہ 12 نومبر کو گرونانک کے یوم پیدائش سے عین قبل، کرتارپور راہداری کا افتتاح کر دیا جائے گا جہاں سے ویزا فری باڈر کراسنگ ہو سکے گی۔

انڈیا میڈیا کے مطابق من موہن سنگھ کی اس تقریب میں شرکت کا امکان نہیں ہے۔

مزید وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ کرتارپور راہداری کا افتتاح ایک بڑا پروگرام ہے پاکستان اس کیلئے بڑے پیمانے پر تیاری کر رہا ہے ہم نے سابق وزیراعظم کو دعوت دینے کا فیصلہ کیا گیا کیونکہ وہ سگھ برادری کی نمائندگی کرتے ہیں۔ ہم انہیں باضابطہ خط بھیجیں گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here