in ,

خفیہ ڈیل کیا ہونے جا رہی ہے نواز شریف اور عمران خان کے درمیان، اس کے بعد سیاست کا نیا موڑ کیا ہوگا

پاکستانی سیاست طلسم ہوش ربا کی مانند ہےجہاں پلک جھپکتے میں ان گنت تبدیلیاں رونما ہوتی رہتی ہیں. کل کے دوست آج کے جانی دشمن نظر آتے ہیں اور کبھی کبھار اچانک سے ڈیل کی خبریں آنا شروع ہو جاتی ہیں. کچھ ایسا ہی معاملہ میاں نواز شریف کے حوالے بھی ہے. یوں تو وزیراعظم ہر تقریر میں مخالفین کو آڑے ہاتھوں لیتے ہیں اور مخالفین کو جیلوں میں ڈالنے کا کریڈٹ لیتے ہیں مگر ان دنوں ان کی سابق وزیراعظم نواز شریف کے ساتھ ڈیل کی خبریں بھی سامنے آ رہی ہیں.

وزیراعظم عمران خان کے بیشتر وزراء خصوصاً وزیر ریلوے شیخ رشید احمد جو ببانگ دہل اپوزیشن لیڈران کو پابند سلاسل کرنے کو عمران خان کا کارنامہ تصور کرتے ہیں، وہ واشگاف الفاظ میں کسی ڈیل یا این آر او دینے کے قطعی خلاف ہیں. ان کا باررہا یہ دعویٰ سامنے آیا کہ نواز شریف منت سماجت پر اتر آئے ہیں اور وزیراعظم سے دوست ممالک کے ذریعے ڈیل دینے کی بات چیت جاری ہے جس کو دباؤ میں لائے بغیر کپتان نےانکار کر دیا.

دوسری طرف میاں نواز شریف کی صاحبزادی محترمہ مریم نواز صاحبہ نے ڈیل یا این آر او مانگنے کی خبروں کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیا اور اعلان کیا کہ ہمارا خاندان جیل کی سلاخوں سے ڈرنے والا نہیں ہے اور میاں نواز شریف کسی صورت میں بھی وزیر اعظم عمران خان سے کوئی ڈیل نہیں کریں گے.

اس صورتحال میں مولانا فضل الرحمن اور شہباز شریف کے درمیان اکتوبر میں آزادی مارچ کے حوالے سے ہونے والی مفاہمت نے بھی حالات کا دھارا بدل دیا ہے. شنید یہ ہے کہ عمران حکومت ہر صورت مولانا اور شہباز کی اسلام آباد کی طرف پیش قدمی کو روکنا چاہتی ہے جس کےلیے دوست ملک سعودی عرب سے بھی حمایت طلب کی گئ ہے. میاں نواز شریف صاحب کے سعودی شاہی خاندان سے دوستانہ مراسم کسی سے ڈھکے چھپے نہیں. 1999 میں بھی سعودی شاہی خاندان ہی نواز شریف صاحب کا میزبان بنا تھا اور سیاسی پناہ دی تھی.

موجود صورتحال کو سامنے رکھتے ہوئے گمان غالب ہے کہ نواز اور عمران کی خفیہ ڈیل متوقع ہے جسے سعودی حکومت کے ایماء پر کیا جائے گا اور بدلے میں مسلم لیگ ن حکومت کے خلاف قدرے نرم رویہ اختیار کرے گی.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

عدنان سمیع نے پاکستانی بن کر ایسا کیا کردیا کہ ہندوستانی سرکار نے ان پر بھاری جرمانہ کردیا

کالاباغ ڈیم سے پاکستان کو کیا کیا فوائد حاصل ہو سکتے ہیں اور نہ بننے کی وجہ جانیے.