تحریک پاکستان کی پارلیمانی اجلاس کی اندرونی کہانی

0
40

ذرائع کے مطابق عمران نے کابینہ میں ایک بار پھر بڑے پیمانے پر ردوبدل کرنے کا فیصلہ کیا ہےامریکہ کی دورہ کے بعد وطن واپسی پر عمران خان نے کارکردگی نہ دکھانے والے وزرا کی چھٹی کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تحریک انصاف کے سنیٹر رہنما اسد عمر جنہیں وزیر خزانہ سے فارغ کر دیا گیا تھا اب ایک بار پھر وفاقی کابینہ میں شامل کیئے جانے کی خبریں گردش میں ہیں۔ اسد عمر کو وفاقی وزیر پٹرولیم کا قلمدان سوپنے جانے کا امکان ہے۔

وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، فواد چودھری صاحب کا قلمدان ایک دفعہ پھر تبدیل کرنے کا امکان ہے۔
تقریبا آٹھ سے دس وزرا کی وزارتوں میں ردوبدل کا امکان کافی زیادہ ہیں ۔ ان میں شفقت محمود کو وزیر داخلہ کا قلمدان سونپے جانے کا وسیع امکان ہے۔

ڈاکٹر بابر اعوان کو وزیراعظم کا مشیر مقرر کیے جانا ہے مگر سابقہ وزیر قانون کی ترجیعات میں سینٹر بنانا شامل ہے۔
ذرائع کے مطابق ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کو بھی نئی ذمہ داریاں سونپی جا سکتی ہیں جبکہ ذبیدہ جلیل وزیر تعلیم بن سکتی ہیں
تحریک انصاف کی پارلیمانی اجلاس کے دوران عمران خان کو وزرا کے غلط رویے کے بارے میں شکایت کی گئی جس کو مددنظر رکھتے ہوئے خان صاحب نے کابینہ کی تبدیلی کا عندیہ دیا ہے

ذرائع نے اس بات کی بھی تصدیق کی ہے کہ وزیراعظم نے پنجاب میں بھی بڑے پیمانے پر کابینہ کی ردوبدل کا فیصلہ کر لیا اس کے علاوہ بیروکریسی میں بھی تبادلے ہو سکتے ہیں۔اس فیصلے کے بعد کئی وزرا کو ہٹایا یا تبدیل کیا جا سکتا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here