امریکہ کشمیر کے معاملے پر ثالثی کا کردار ادا کرے گا کہ نہیں؟ ٹرمپ کے کیا خیالات ہیں

0
72

پچھلے مہینے وزیراعظم عمران خان کے دورہ امریکہ کے دوران امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان اوربھارت کے درمیان کشمیر کے مسئلے پر ثالث بننے کی پیشکش کی، جس کے بعد عالمی سطح پر ایک بحث کا آغاز ہو گیا اور اسے پاکستانی موقف کی کامیابی سمجھا گیا. امریکہ جیسی طاقتور ترین ریاست کے سربراہ کی طرف سے ثالثی کی پیشکش نے عالمی برادری کی توجہ کشمیر کے مسئلے کی طرف مبذول کرائی.

مگر اس کے بعد بھارت نے آئین کی دفعہ 370 کا خاتمہ کر کے کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ کر دیا جس کے بعد حالات نے رخ بدلا، رائے عامہ تبدیل ہوئ اور کشمیر میں کرفیو نافذ کر دیا گیا. مقبوضہ جموں و کشمیر میں حالات خراب ہو گئے اور معمولات زندگی شدید متاثر ہوئے جو تاحال جاری ہے.

پاکستان نے آرٹیکل 370 کی منسوخی پر شدید ردعمل کا اظہار کیا اور ہر فورم پر اس مسئلے کو اٹھایا، مگر عالمی سطح پر خاطر خواہ کامیابی حاصل نہ ہو سکی. عرب ممالک کی طرف سے اس معاملے پر انتہائی سرد مہری کا مظاہرہ کیا گیا اور متحدہ عرب امارات نے بھارتی وزیراعظم نرندرا مودی کو اعلیٰ سول ایوارڈ تک سے نوازا.

حالیہ دنوں اقوام متحدہ کے سالانہ اجلاس میں شرکت کے لیے دنیا بھر کے سربراہان مملکت امریکہ میں موجود ہیں. وہاں بھی کشمیر کے مسئلے کی گونج سنائی دے رہی ہے مگر جب ووٹنگ کی باری آئی تو برادر اسلامی ملک سعودی عرب نے بھی پاکستان کا ساتھ نہ دیا جس سے شدید مایوسی پائ گئ.پاکستانی وزیرآعظم سفارتی محاذ کے علاوہ اندرونی محاذ پر بھی اپوزیشن کے نشانے پر ہیں جن کا مؤقف ہے کہ حکومت کو جس انداز میں کشمیر کا مقدمہ لڑنا چاہئے تھا اس انداز سے نہیں لڑا۔ اس سب کے دوران پاکستانی حکومت شدید دباؤ میں ہے۔۔

دوسری طرف صدر ٹرمپ نے وزیراعظم مودی کے ساتھ ایک بڑی ریلی میں شرکت کی اور والہانہ انداز سے بھارت کی حمایت کا اعلان کیا.مودی نے اس ریلی سے خطاب کرتے ہوئے آرٹیکل 370 کے خاتمے کو بھارت کی بہت بڑی فتح قرار دیا اور کہا کہ ہم نے بہت بڑی رکاوٹ ختم کر دی ہے۔بعد ازاں پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات میں صدر ٹرمپ نے ایک بار پھر ثالثی کی پیشکش کی اور کہا کہ اگر بھارت اور پاکستان چاہے تو وہ اس معاملے پر ثالثی کرنے کو تیار ہیں. مگر موجودہ تناظر میں صدر ٹرمپ کا یہ بیان محض سیاسی بیان سے زیادہ نہیں لگ رہا کیونکہ بھارت کے ساتھ امریکہ کے تعلقات کسی سے ڈھکے چھپے نہیں.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here