وزیر اعظم عمران خان نے ’نوجوان ‘ لڑکے کو وزیر منتخب کر دیا

0
5

ڈاکٹر معید یوسف کو وزیر اعظم کا معاون خصوصی مقررکر دیا گیا ہے۔ معید یوسف قومی سلامتی ڈویژن، اسٹریٹجک پالیسی پلاننگ کے معاون خصوصی ہونگے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے کابینہ میں ایک اور معاون خصوصی کا اضافہ کر دیا ہے۔ ڈاکٹر معید یوسف کو وزیر اعظم کا معاون خصوصی مقررکیا گیا

ہے، ڈاکٹر معید یوسف قومی سلامتی ڈویژن، اسٹریٹجک پالیسی پلاننگ کے معاون خصوصی ہونگے، کابینہ ڈویژن نے ڈاکٹر معید یوسف کی تعیناتی کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا ہے، ان کے اختیارات وزیر مملکت کے برابر ہونگے۔یاد رہے کہ اس سے قبل وزارت پوسٹل سروسز کو ختم کرکے وزارت مواصلات میں ضم کر دیا گیا تھا۔ تفصیل کے مطابق وفاقی حکومت نے کفایت شعاری مہم کے تحت وزارت پوسٹل سروسز ختم کردی تھی۔

وزارت ختم کرنے کا فیصلہ کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا تھا جس کے بعد وفاقی وزیر، سیکریٹری پوسٹل سروسز سمیت دیگر آسامیاں ختم کردی گئی تھیں۔ تاہم وزارت پوسٹل کے ماتحت کام کرنے والے 13 ہزار ڈاک خانے اور متعلقہ تمام شعبوں کو وزارت مواصلات کے ماتحت کرد یا تھا۔قومی اخبار میں شائع رپورٹ کے مطابق مواصلات ڈویژن کے محکموں میں نیشنل پالیسی پلاننگ ، انٹر نیشنل روڈ منصوبہ ، موٹر وے ، ہائی وے، نیشنل ہائی وے اتھارٹی ، روڈ فنڈ، نیشنل روڈ سیفٹی کونسل، سیونگ بینک ،پوسٹل لائف انشورنس ، انٹر نیشنل روڈ منصوبہ ، سٹریٹجک روڈز شامل ہونگے۔ تاہم مراد سعید کی وزارت مواصلات اور پوسٹل سروسز کو وزارت مواصلات برقرار رکھا جائے گا۔

وزار ت ختم کرنے کا فیصلہ وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں کیا گیا تھا۔ فیصلہ قومی خزانے پر بوجھ کم کرنے کیلئے کیا گیا تھا۔ واضح رہے پاکستان کو بے شمار معاشی مسائل کا سامنا ہے جس کے باعث پاکستان کو اربوں ڈالر کا قرض بھی لینا پڑا، تاہم موجودہ رپورٹس کے مطابق پاکستان کے حالیہ خسارے میں 73 فیصلہ کمی آئی ہے جس کے مطابق پاکستان کی معیشت درست سمت میں گامزن ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے برسر اقتدار آنے کے بعد سرکاری خرچے کے بے دریخ استعمال کو روکنے کا اعلان کیا گیا تھا جس کے بعد وہ امریکا بھی مسافر طیارے پر گئے جس سے سرکاری خزانے پر کم بوجھ پڑا تھا۔ تاہم کفایت شعاری کیلئے حکومت کا ایک اور اقدام سامنے آیا تھا جس کے مطابق وزارت پوسٹل کو ختم کر دیا گیا تھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here